موٹروے پولیس اور سمگلرز میں فائرنگ کا تبادلہ

* موٹروے پولیس اور سمگلرز میں فائرنگ کا تبادلہ
* موٹروے پر فائرنگ کی انکوائری شفاف طریقے سے کی جائے گی۔( آئی جی نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس)
مورخہ 29-05-2018 بوقت تقریباً 12:50بجے دن کسٹم انٹلیجنس ڈائریکٹریٹ نے اطلاع دی کہ بیش قیمت غیر ملکی سمگل شدہ سامان بذریعہ موٹروے خیبر پختون خواہ سے پنجاب سمگل کیا جا رہا ہے۔اس اطلاع پر اسلام آباد ٹول پلازہ پر بس نمبری LES-09کونیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس کے افسران نے روکا اور مذکورہ بس کو روکنے والے افسران کے مطابق بس میں موجود مسلح افراد جو کہ اسلحہ اور ڈنڈوں سے لیس تھے نے موٹروے پولیس آفسران کے ساتھ مزاحمت شروع کر دی اور ہوائی فائرنگ کرتے ہوے موقع سے بس کو لیکر فرار ہو گئے ، موٹروے پولیس آفسران نے بس کا تعاقب کیااور کچھ فاصلے پر فائرنگ کا تبادلہ ہوا ۔ جس کے نتیجے میں زخمی ہونے والے عبدالرحمن کو موٹروے پولیس نے فوری طور پر پمزہسپتال منتقل کیا جہاں اُس کی حالت خطرے سے باہر بتائی جاتی ہے ۔ واقع کی مکمل انکوائری کے لیے ڈی آئی جی موٹروے محمد عمر شیخ نے سیکٹر کمانڈر ،ڈی ایس پی ارباب یاور حیات کو انکوائری آفسیر مقرر کر دیا جبکہ واقعہ کی FIRتھانہ نصیر آباد میں درج کر لی گئی ہے۔اور دونوں متعلقہ پیڑولنگ آفیسران کو معطل کر دیا۔ آئی جیNH&MP امجد جاوید سلیمی نے اس بات کا اعادہ کیا ہے کہ اس معاملے کی انکوائری تمام پہلوں کو مد نظر رکھتے ہوے مکمل شفاف طریقے سے کی جائے گی اور قصور وار کو قانون کے مطابق قرار واقع سزا دی جایئگی۔