انسپکٹر جنرل ، ڈاکٹر سید کلیم امام کا موٹروے پولیس پولیس افسران سے خطاب

انسپکٹر جنرل ، نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس ڈاکٹر سید کلیم امام نے کہا کہ موٹر وے پولیس کے افسران اپنے امتیازی اوصاف، ایمانداری ، خوش اخلاقی اور قا نون کے یکساں نفاذ کی وجہ سے پہچانے جاتے ہیں اورانہی اوصاف کی وجہ سے یہ فورس قو م کا فخر بن چکی ہے اور ایک منفردادارے کا مقام رکھتی ہے ۔ میری خوش نصیبی ہے کہ مجھے اس محکمہ کی کمانڈ عطا کی گئی جو نہ صرف پاکستان بلکہ پوری دنیا میں ایمانداری میں اپنا ایک مقام رکھتا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس ٹریننگ کالج شیخوپورہ ، سیکٹر ہیڈ کواٹر M-2ساؤتھ اور M-4سیال موڑ کے دورہ کے موقع پر پولیس افسران وملازمان کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میں ڈی آئی جی موٹروے غلام رسول زاہد، کمانڈنٹ ٹریننگ کالج ڈی آئی جی خالد محمود ، ایس ایس پی M-2(ساؤتھ) کامران عدیل، ایس ایس پی M-2(نارتھ)شہریار سکندر، ایس ایس پی M-1 آفتاب محسود، ڈی ایس پی ٹریننگ کالج شازیہ شاہد اور دیگر سینئر افسران و ملازمان نے شرکت کی۔اس موقع پرکمانڈنٹ ٹریننگ کالج ڈی آئی جی خالد محمودنے انسپکٹر جنرل ڈاکٹر سید کلیم امام کو ٹریننگ کالج کے بارے میں تفصیلی بریفنگ بھی دی ۔ اجلا س میں فیلڈ افسران کی کا کر دگی کو سراہتے ہوئے انسپکٹر جنرل نے ہدایت دی کہ وہ اپنے فرائض کی انجام دہی کے دوران خوش گفتاری اور قانون کے بلا امتیاز اطلاق کے ساتھ ساتھ مصیبت زدہ لوگوں کی مدد کو ہر صورت ممکن بنایا جائے۔ انسپکٹر جنرل نے مزید کہا کہ نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس پاکستان کا ایک باوقار ادارہ ہے اور ملک میں ایک امتیازی حیثیت رکھتا ہے جس کے افسران نا صرف اعلی تعلیم یافتہ ہیں بلکہ افسران نے اپنی شائستہ روی، خوش اخلاقی، دیانتداری، مدد گار پولیس اور مثالی رویہ کے ذریعے عوام کے دلوں میں ایک اچھا مقام حاصل کیا ہے۔انسپکٹر جنرل نے مزید کہا کہ مستقبل میں ادارے کا دائرہ کار مزید وسیع ہو گا اور فیلڈ اسٹاف کو تمام لاجسٹک سپورٹ فراہم کی جائیگی تاکہ اس فورس کی گارکردگی کو مزید بہتر بنایا جا سکے۔ا نسپکٹر جنرل ڈاکٹر سید کلیم امام نے کہا کہ محکمہ کے ملازمان کے لیے میڈیکل پالیسی کا جلد اعلان کیا جائے گا اور کانسٹیبل اور ہیڈ کانسٹیبل عہدہ کے ملازمان کو جلد ترقی دی جائے گی۔ خطاب کے آخر میں انسپکٹر جنرل ڈاکٹر سید کلیم امام نے افسران و ملازمان کے مسائل سنے اور ان مسائل کے فوری حل کے لیے ہدایات جاری کیں۔

Event 14-09-17 (1)
Event 14-09-17 (2)