قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے مواصلات کی ذیلی کمیٹی کا موٹروے پولیس ہیڈ کواٹرز کا دورہ

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے وزارت مواصلات کی ذیلی کمیٹی نے ایم این اے انجینئر حمیدالحق خلیل کی زیرقیادت آ ج نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس ہیڈ کواٹر ز اسلام آباد کا دورہ کیا ۔ذیلی کیمٹی کے دیگر ممبران ایم این اے محمد ریاض ملک،عبدالرحمان ملک کانجو، رامیش لال اور محترمہ نسیمہ حفیظ پانیزئی نے بھی شرکت کی۔ وزارت مواصلات سے اورنگزیب حق ایڈیشنل سیکرٹری اور آمنہ عمران خان جوائنٹ سیکرٹیری نے بھی شرکت کی۔ کنو ینر ایم این اے انجینئر حمیدالحق خلیل نے کہا کہ موٹروے پولیس ایک شاندار محکمہ ہے۔جس نے اپنی کارکر دگی کی بدولت نیک نامی کمائی ہے ۔موٹروے پولیس پر تمام قوم کو فخر ہے۔ انہوں نے اپنی اور ذیلی کمیٹی کی جانب سے موٹروے پولیس کو ہر ممکنہ وسائل فراہم کرنے کی یقین دہانی کرائی ۔
انسپکٹر جنرل موٹروے پولیس محمد سلیم بھٹی نے ممبران کو محکمے میں 2008سے اب تک ہونیوالی بھرتیوں اور افرادِ قوت کی کمی کے بارے میں ذیلی کمیٹی کو بریفنگ دی۔ ذیلی کمیٹی کو بتایا گیا کہ لیاری ایکسپریس وے، مری ایکسپریس وے اور M-4کیلئے کوئی نفری نہیں دی گئی جبکہ ان شاہراؤں پر موجودہ نفری میں سے نکال کر افسران تعینات کئے گئے ہیں۔ جس کی وجہ سے محکمے کی کار کردگی متاثر ہو رہی ہے ۔ اس کے علاوہ بلوچستان میں RCDہائی وے (N-25) اور کوسٹل ہائی وے (N-10) پر بھی نفری کی کمی کی وجہ سے صرف کچھ حصوں میں موٹروے پولیس تعینات ہے ۔ ایم این اے نسیمہ حفیظ پانیزئی نے کہا کہ کچلاک -ژوب روڈ پر موٹروے پولیس نہ ہونے کی وجہ سے بہت حادثات ہو رہے ہیں۔ اس لئے اس شاہراہ پر بھی موٹروے پولیس تعینات کیاجائے تاکہ انسانی جانوں کو بچایا جا سکے۔ کنوینر حمید
الحق خلیل ایم این اے نے کہا کہ مجھے موٹروے پولیس سے ہمدردی ہے کہ وہ نفری کی انہتائی کمی کے باوجود کام کر رہی ہے ۔ ان کی گاڑیاں بہت پرانی ہیں جو کہ ان کی جان کیلئے خطرہ ہے۔ انہوں نے یقین دلایا کہ وہ اور ان کی ٹیم موٹروے پولیس کو نفری اور دوسرے لوازمات کی فراہمی کیلئے حکومت کو نہ صرف سفارشات پیشں کریں گے بلکہ فرداََ فرداََ وزراء سے اور اگر ضرورت پڑی تو وزیر اعظم سے بھی ملاقات کریں گے ۔

Image 21-8-2015